in

‘لال سنگھ چڈھا’ دیکھ کر وریندر سہواگ اور سریش رائنا ہو گئے جذباتی

'لال سنگھ چڈھا' دیکھ کر وریندر سہواگ اور سریش رائنا ہو گئے جذباتی

MUMBAI, LAGATAR URDU NEWS

بالی ووڈ کے مسٹر پرفیکشنسٹ عامر خان کی فلم ‘لال سنگھ چڈھا’ پر تنازع جاری ہے۔ اس فلم کے حوالے سے کئی مقامات پر مظاہرے بھی ہو رہے ہیں جب کہ بہت سے لوگ اس فلم کی حمایت کر رہے ہیں۔ انگلینڈ کے سابق اسپنر مونٹی پنیسر نے فلم کی مخالفت کرتے ہوئے کہا تھا کہ یہ فلم بھارتی فوج اور سکھوں کی توہین ہے۔ اس کے ساتھ ہی ہندوستان کے سابق کرکٹرز وریندر سہواگ اور سریش رائنا نے عامر کی فلم کی تعریف کی ہے۔

سہواگ اور رائنا نے ‘لال سنگھ چڈھا’ کا جائزہ لیا ہے۔ یہ فلم 11 اگست کو سینما گھروں میں ریلیز ہوئی تھی۔ ادویت چوہان کی ہدایت کاری میں بننے والی اس فلم میں عامر اور کرینہ کپور مرکزی کردار ادا کر رہے ہیں۔ عامر خان پروڈکشن ہاؤس نے اس فلم پر دونوں کرکٹرز کا ردعمل شیئر کیا ہے۔ کیپشن میں لکھا تھا – لال سنگھ چڈھا کو دیکھنے کے بعد سہواگ اور رائنا کا ردعمل۔
سہواگ ویڈیو میں کہتے ہیں- اس فلم نے ہندوستان کے لوگوں کے جذبات کو اپنی لپیٹ میں لیا ہے۔ عامر خان کی فلم دیکھنے جاتے ہیں تو نہ صرف پرفارمنس کے بارے میں سوچنا پڑتا ہے بلکہ دیگر اداکاروں کی بھی کمال کی اداکاری ہوتی ہے۔ مجھے فلم بہت پسند آئی۔

سریش رائنا کہتے ہیں – لال سنگھ چڈھا کی ٹیم نے فلم کا بہترین تصور بنایا اور سخت محنت کی۔ سب سے بڑی بات یہ ہے کہ لو اسٹوری والے خوبصورت گانے دیکھ کر مزہ آیا۔ آل دی بیسٹ عامر خان۔ آپ سب اس فلم سے لطف اندوز ہوں۔

لال سنگھ چڈھا میں مونا سنگھ اور ناگا چیتنیا بھی اہم کردار ادا کر رہے ہیں۔ ناگا چیتنیا نے بھی اس فلم سے بالی ووڈ میں قدم رکھا۔ فلم کو عامر خان پروڈکشن اور وائی کام 18 نے پروڈیوس کیا ہے۔ خیال کیا جا رہا ہے کہ یہ فلم ہالی ووڈ کی بلاک بسٹر فلم ‘فوریسٹ گم’ کا ہندی ریمیک ہے۔ آسکر ایوارڈ یافتہ اداکار ٹام ہینکس نے ‘فاریسٹ گمپ’ میں کام کیا۔

 سپر ٹیک کے ٹوئن ٹاورز 28 اگست کو گرائے جائیں گے، سپریم کورٹ نے دے دی منظوری

Written by Arif

 سپر ٹیک کے ٹوئن ٹاورز 28 اگست کو گرائے جائیں گے، سپریم کورٹ نے دے دی منظوری

 سپر ٹیک کے ٹوئن ٹاورز 28 اگست کو گرائے جائیں گے، سپریم کورٹ نے دے دی منظوری

کونسل میں انتشار، صدر کہہ رہے ہیں سب ٹھیک ہے، ارکان کہہ رہے ہیں کہ صرف 4-5 لوگ کونسل چلا رہے ہیں۔

کونسل میں انتشار، صدر کہہ رہے ہیں سب ٹھیک ہے، ارکان کہہ رہے ہیں صرف 4-5 لوگ کونسل چلا رہے ہیں۔